مجھ پہ اللہ مرے اتنی عنایت کرنا

مجھ پہ اللہ مرے اتنی عنایت کرنا
چاہتا ہوں ترے محبوبؐ کی مدحت کرنا

مقصدِ زیست نہیں اور کوئی اس کے سوا
بندگی رب کی، محمدؐ کی اطاعت کرنا

ہم گنہ گار بھی ہیں آپؐ کی امت میں حضورؐ
آپؐ کا کام ہے محشر میں شفاعت کرنا

آپؐ نے بخشا ہے انسان کو رشتوں کا شعور
پیار چھوٹوں سے، بڑے لوگوں کی عزت کرنا

عام کرنا ہے بھلائی کو بحکمِ سرکارؐ
اور لازم ہے برائی کی مذّمت کرنا

سرورِ دیں نے جلائے ہیں عمل کے جو چراغ
فرض مومن کا ہے ان سب کی حفاظت کرنا

آپؐ کے خلق نے یہ بات بتائی ہے ہمیں
کام انساں کا ہے انساں سے محبت کرنا

اور کوئی نہیں اپنا تو تشخص ہے یہی
پیش اپنی نہیں سرکارؐ کی سیرت کرنا

مری آنکھوں کی یہ معراج ہے میرے آقاؐ
آپ کے مصحفِ عارض کی تلاوت کرنا

اس کے اخلاق کا قرآن ہے شاہد اعجازؔ
جس نے سکھلایا ہے دشمن سے مروت کرنا