ہے نور کی پڑی ہوئی چلمن جبیں جبیں

ہے نور کی پڑی ہوئی چلمن جبیں جبیں
کردارِ مصطفیؐ سے ہے روشن جبیں جبیں

پہچانتے ہیں صرف انہیں سرکارؐ کے غلام
ڈالے ہوئے نقاب ہیں دشمن جبیں جبیں

اللہ کے سوا کسی در پہ نہیں جھکے
اسلام نے لگائی ہے قدغن جبیں جبیں

تقلیدِ مصطفیؐ سے گریزاں ہیں اس لیے
محسوس ہو رہی ہے یہ الجھن جبیں جبیں

سجدے کا ہے نشاں، کہیں قشقہ لگا ہوا
رکھتے ہیں فرق شیخ و برہمن جبیں جبیں

ہے اتباع سرورؐ کونین کی دلیل
سجدوں کا جو چراغ ہے روشن جبیں جبیں

ٹھہرے جو آ کے گنبدِ خضرا کے سائے ہیں
برسے وہ پھول بن گئی گلشن جبیں جبیں

خاک درِ رسولؐ کا اعجازؔ دیکھیے
اعجازؔ ہے نبی ہوئی کندن جبیں جبیں