جس قدر اِزم بھی ہیں جہاں کے، اُن سے انسا ن کو کیا ملا ہے