بڑی دلیل ہے لوگو! یہ اِرتقا کی دلیل

بڑی دلیل ہے لوگو! یہ اِرتقا کی دلیل
کہ ذات سرورؐ عالم کی ہے خدا کی دلیل

یہ کہکشاں، یہ ستارے، یہ چاند اور سورج
یہ سب کے سب ہیں محمدؐ کے نقشِ پا کی دلیل

جنہیں حضورؐ سے نسبت ہے وہ نہ گھبرائیں
شدید حبس کا موسم تو ہے ہوا کی دلیل

وہ دشمنوں کو بھی اپنے دُعائیں دیتے تھے
یہی دلیل ہے اخلاقِ مصطفیٰؐ کی دلیل

کہاں حضورؐ نے رب ہے تو سب نے مان لیا
اِک آشنا کی طرف سے تھی آشنا کی دلیل

مرے حضورؐ سے پہلے مرے حضورؐ کے بعد
کوئی مثال کرم کی نہ ہے عطا کی دلیل

جو بات نکلی زباں سے وہ بات ہو کے رہی
کسی سے رد نہ ہوئی شاہِؐ انبیاء کی دلیل

عمل بھی کیجیے اعجازؔ اُن کی سیرت پر
عمل سے بڑھ کے نہیں کوئی بھی وفا کی دلیل