سیرت کے معجزے وہ دِکھائے رسولؐ نے

سیرت کے معجزے وہ دِکھائے رسولؐ نے
آتش کدے میں پھول کھلائے رسولؐ نے

کانٹے برائیوں کے ہٹائے رسولؐ نے
اچھائیوں کے باغ لگائے رسولؐ نے

دنیا میں کتنے رنج اُٹھائے رسولؐ نے
دریا بھی رحمتوں کے بہائے رسولؐ نے

انسان کو لباسِ تمدّن عطا کیا
آداب زندگی کے سکھائے رسولؐ نے

یہ ساری کائنات منّور اُنہی سے ہے
ذہنوں میں جو چراغ جلائے رسولؐ نے

دنیا پیامِ امن سے بیدار ہوگئی
توڑا طلسمِ کفر صدائے رسولؐ نے

پیاسے جو خون کے تھے انہیں کر دیا معاف
سب کو چھپا لیا ہے رِدائے رسولؐ نے

یہ ساری کائنات ہے صدقہ رسولؐ کا
سب کچھ عطا کیا ہے خدائے رسولؐ نے

انساں کی رہنمائی کریں گے جو حشر تک
زرّیں اصول ایسے بتائے رسولؐ نے

اب خوف کیا تمازتِ خورشیدِ وقت سے
پھیلا دیے ہیں دھوپ میں سائے رسولؐ نے

جو ننگِ آدمی تھے انہیں بھی تو دیکھیے
انساں بنا دیا ہے دعائے رسولؐ نے

پہلے تو کوئی شخص مجھے جانتا نہ تھا
بخشا ہے یہ مقام ثنائے رسولؐ نے

اعجازؔ اب مجھے کوئی دنیا میں غم نہیں
سرشار کر دیا ہے وِلائے رسولؐ نے